15.9 C
Karachi
Thursday, February 22, 2024

ٹیسلا کا چین سے 16 لاکھ سے زائد گاڑیاں واپس منگوانے کا فیصلہ

ضرور جانیے

امریکی الیکٹرک کار ساز کمپنی ٹیسلا نے اسٹیئرنگ سافٹ ویئر اور ڈور لاکنگ سسٹم میں خرابی کے باعث چین سے 16 لاکھ سے زائد گاڑیاں واپس بلانے کا فیصلہ کیا ہے۔

رپورٹس کے مطابق گاڑیوں کو درپیش مسائل کو سافٹ ویئر میں ریموٹ اپ ڈیٹس کے ذریعے حل کیا جائے گا جس کا مطلب ہے کہ گاڑیوں کو ڈیلر شپ یا گیراج لے جانے کی ضرورت نہیں ہوگی۔

تقریبا ایک ماہ قبل ٹیسلا نے آٹو پائلٹ سافٹ ویئر میں خرابی کی وجہ سے امریکہ سے 20 لاکھ گاڑیاں بھی واپس بلا لی تھیں۔

گزشتہ سال مئی میں چینی ریگولیٹر نے کہا تھا کہ دس لاکھ سے زائد گاڑیوں کو تیز رفتاری اور بریکنگ سسٹم میں مسائل کا سامنا کرنا پڑ سکتا ہے، جب امریکی الیکٹرک کار کمپنی نے معاون ڈرائیونگ فنکشنز اور ڈور لاکنگ سسٹم میں مسائل کا انکشاف کیا تھا۔

اسٹیٹ ایڈمنسٹریشن فار مارکیٹ ریگولیشن کا کہنا ہے کہ 26 اکتوبر 2022 سے 16 نومبر 2023 کے درمیان تیار کی جانے والی 7 ہزار 538 امپورٹڈ ماڈل ایس اور ایکس گاڑیوں کو فوری طور پر واپس بلایا جا رہا ہے جس کی وجہ گاڑیوں میں نقائص ہیں جس کی وجہ سے تصادم کے دوران گاڑیوں کے دروازے کھل سکتے ہیں۔ ، جو سیکورٹی کے لئے خطرہ بن سکتا ہے۔

پسندیدہ مضامین

ٹیکنالوجیٹیسلا کا چین سے 16 لاکھ سے زائد گاڑیاں واپس منگوانے کا فیصلہ