25.9 C
Karachi
Friday, April 19, 2024

آئی ایم ایف کی شرائط پر عملدرآمد جاری: سرکاری ملازمین کیلئے نئی پنشن سکیم متعارف کرانے کی تجویز

ضرور جانیے

اسلام آباد: حکومت کو تجویز دی گئی ہے کہ سرکاری ملازمین کو ہندوستانی طرز کی رضاکارانہ پنشن فراہم کی جائے۔

وزارت خزانہ ذرائع کے مطابق یکم جولائی سے نئی رضاکارانہ پنشن اسکیم متعارف کرانے کی تیاریاں جاری ہیں اور نئی اسکیم سیکیورٹیز اینڈ ایکسچینج کمیشن آف پاکستان (ایس ای سی پی) نے تیار کی ہے۔

ذرائع کے مطابق تمام نئی سرکاری بھرتیاں رضاکارانہ پنشن اسکیم کے تحت کیے جانے کا امکان ہے تاہم پہلے سے بھرتی ہونے والے سرکاری ملازمین کو پنشن بجٹ سے دیا جائے گا تاہم وفاقی حکومت انہیں موجودہ سرکاری ملازمین کی رضامندی سے نئی اسکیم میں منتقل کرسکتی ہے۔

ذرائع کا کہنا ہے کہ ایس ای سی پی نے نئی اسکیم کو پبلک اور پرائیویٹ سیکٹر میں لاگو کرنے کی تجویز دی ہے، نجی شعبہ فی الحال ملازمین کو پروویڈنٹ فنڈ یا گریجویٹی کی سہولت فراہم کر رہا ہے، ایس ای سی پی نے تجویز دی ہے کہ نجی شعبے کے ملازمین ملازمین کو صرف رضاکارانہ پنشن اسکیم فراہم کریں کیونکہ پروویڈنٹ فنڈ یا گریجویٹی ریٹائرمنٹ پر ملازمین کو باقاعدہ آمدنی فراہم نہیں کرتی۔

ذرائع کے مطابق اس اسکیم کے تحت ملازمت میں تبدیلی کی صورت میں بھی پنشن کی سہولت جاری رہے گی۔

ذرائع کا کہنا ہے کہ اس وقت ملک میں 43 پنشن فنڈز کام کر رہے ہیں جن میں 61 ارب روپے کی سرمایہ کاری کی جا چکی ہے۔ خیبر پختونخوا حکومت نے پہلی بار 2 سال قبل پنشن فنڈ میں سرمایہ کاری کی تھی جہاں سرکاری ملازمین کے لیے 21 پنشن فنڈز مختص کیے گئے تھے۔ کام کر رہے ہیں

ذرائع کے مطابق پنجاب حکومت ملازمین کے لیے رضاکارانہ پنشن اسکیم بھی شروع کرنے جا رہی ہے۔

پسندیدہ مضامین

پاکستانآئی ایم ایف کی شرائط پر عملدرآمد جاری: سرکاری ملازمین کیلئے نئی...