25.9 C
Karachi
Friday, April 19, 2024

اب تک کراچی کی کتنی نشستوں پر کامیاب امیدواروں کے نوٹیفکیشن جاری ہوئے؟

ضرور جانیے

الیکشن کمیشن آف پاکستان (ای سی پی) نے کراچی کی قومی اسمبلی کی 22 میں سے 21 نشستوں پر کامیاب امیدواروں کا نوٹیفکیشن جاری کردیا۔

کراچی کی قومی اسمبلی کی 21 نشستوں پر کامیاب امیدواروں کا نوٹیفکیشن جاری کردیا گیا، ایم کیو ایم کے 14 اور پیپلز پارٹی کے 7 امیدواروں کی کامیابی کا نوٹیفکیشن جاری کردیا گیا۔

الیکشن کمیشن نے این اے 229 ملیر ون سے پیپلز پارٹی کے جام عبدالکریم بجر، این اے 230 ملیر 2 سے پیپلز پارٹی کے سید رفیع اللہ اور این اے 231 ملیر 3 سے پیپلز پارٹی کے عبدالحکیم بلوچ کی کامیابی کا نوٹیفکیشن جاری کر دیا ہے۔

این اے 232 کورنگی کراچی ون سے ایم کیو ایم کے آسیہ اسحاق، این اے 23 کورنگی کراچی ٹو سے ایم کیو ایم کے محمد جاوید حنیف، این اے 234 کورنگی کراچی 3 اور این اے 235 کراچی شرقی سے ایم کیو ایم کے محمد معین عامر پیرزادہ شامل ہیں۔ ایم کیو ایم کے محمد اقبال خان کی ون سے کامیابی کا نوٹیفکیشن جاری کر دیا گیا۔

الیکشن کمیشن نے این اے 236 کراچی ایسٹ ٹو سے ایم کیو ایم کے حسن صابر، این اے 237 کراچی ایسٹ تھری سے پیپلز پارٹی کے اسد اسلم نیازی اور این اے 239 کراچی ساؤتھ ون سے پیپلز پارٹی کے نبیل گبول کی کامیابی کا نوٹیفکیشن جاری کردیا۔

اس کے علاوہ این اے 240 کراچی ساؤتھ 2 سے ایم کیو ایم کے ارشد وہرہ، این اے 241 کراچی ساؤتھ 3 سے پیپلز پارٹی کے مرزا اختر بیگ، این اے 242 کراچی کیماڑی ون، این اے 243 کراچی کیماڑی سے ایم کیو ایم کے سید مصطفی کمال شامل ہیں۔ این اے 244 کراچی ویسٹ ون سے ایم کیو ایم کے فاروق ستار اور این اے 245 کراچی ویسٹ 2 سے ایم کیو ایم کے سید حفیظ الدین کو کامیابی کا نوٹیفکیشن جاری کیا گیا ہے۔

این اے 246 کراچی ویسٹ تھری سے ایم کیو ایم کے سید امین الحق، این اے 247 کراچی سینٹرل ون سے ایم کیو ایم کے خواجہ اظہار الحسن، این اے 248 کراچی سینٹرل ٹو، این اے 249 سے ایم کیو ایم کے خالد مقبول صدیقی، کراچی سینٹرل 3 سے ایم کیو ایم کے احمد سلیم صدیقی اور این اے 250 کراچی سینٹرل 4 سے ایم کیو ایم کے فرحان چشتی کی کامیابی کا نوٹیفکیشن بھی جاری کردیا گیا۔

واضح رہے کہ گزشتہ روز سندھ ہائی کورٹ نے کراچی سے قومی و صوبائی اسمبلی کے 40 حلقوں کے انتخابی نتائج کے خلاف درخواستوں پر فیصلہ سنایا تھا۔

سندھ ہائی کورٹ نے کہا تھا کہ الیکشن کمیشن 22 فروری تک تمام درخواستوں پر فیصلہ کرے۔ اصل بات یہ ہے کہ الیکشن کمیشن میں خیرسگالی ہونی چاہیے۔

پسندیدہ مضامین

الیکشن 2024اب تک کراچی کی کتنی نشستوں پر کامیاب امیدواروں کے نوٹیفکیشن جاری...