23.9 C
Karachi
Tuesday, February 27, 2024

ودہولڈنگ ٹیکس براہ راست وصولی کیلیے سویپ سسٹم تیار

ضرور جانیے

اسلام آباد: وفاقی حکومت نے ودہولڈنگ ٹیکس کی براہ راست وصولی کے لیے سویپ پیمنٹ رسید کا نظام تیار کرلیا۔

وفاقی حکومت نے ود ہولڈنگ ٹیکس چوری کی روک تھام، دستاویزات کو فروغ دینے، دستاویزات کو فروغ دینے کے لیے سویپ پیمنٹ رسید سسٹم (ایس پی آر) تیار کیا ہے، جس میں ایجنٹوں کو کٹوتی شدہ ود ہولڈنگ ٹیکس کے ساتھ کاٹا جائے گا۔ کٹوتی کے بجائے اسے براہ راست خزانے میں جمع کرایا جائے گا۔

نظام کے نفاذ کے لیے ایف بی آر نے 2002 میں انکم ٹیکس رولز کا مسودہ تیار کیا تھا اور اسٹیک ہولڈرز کی رائے کے لیے اسٹیک ہولڈرز کو جاری کیا تھا، گزٹ نوٹیفکیشن میں انکم ٹیکس ترمیمی قواعد کے نفاذ کے بعد اعتراضات اور آراء کے لیے 7 دن کا وقت مقرر کیا گیا تھا۔ کیا جائے گا.

ٹیکس ریونیو

ایف بی آر حکام کا کہنا ہے کہ اس اقدام کا بنیادی مقصد ٹیکس ریونیو اور ٹیکس نیٹ میں اضافہ کرنا ہے، اس سے قبل ہولڈنگ ایجنٹس سپلائرز سے ٹیکس فراہم کرتے تھے جس سے نظام براہ راست سرکاری خزانے میں جائے گا۔

ایف بی آر کی جانب سے تیار کردہ مجوزہ رولز کی کاپی ایکسپریس کو دستیاب ہے جس کے مطابق انکم ٹیکس رولز 2002 کے باب 9 کو پارٹ فور کے نام سے ایک نئے باب میں شامل کیا گیا ہے۔

ایڈیٹ رولز کا اطلاق ایف بی آر کے تمام نوٹیفائیڈ سویپ ایجنٹس پر ہوگا۔

مجوزہ رولز کے مطابق ہر سویپ ایجنٹ کو سویپ آئی ڈی جاری کی جائے گی، اسے اپنا آئی آر آئی ایس پروفائل اپ ڈیٹ کرنا ہوگا اور ایف بی آر سے منظور شدہ اور لینس کمپنی فسکل الیکٹرانک ڈیوائس سسٹم اور سافٹ ویئر کی جانب سے جاری کردہ ہر نوٹیفکیشن سویپ ایجنٹ کو کور سے منسلک کرنا ہوگا۔

سویپ آئی ڈی اور ایس پی آر نمبر اس نظام کے تحت جاری ہونے والی الیکٹرانک سویپ پیمنٹ رسیدوں پر درج ہوں گے’ رسیدوں میں سویپ ایجنٹس اور سپلائرز کے نام، پتے اور این ٹی این نمبر اور سیلز ٹیکس رجسٹریشن نمبر بھی شامل ہوں گے۔

سویپ پیمنٹ رسید

مجوزہ رولز کے مطابق ٹیکس ریفنڈز اور ٹیکس ایڈجسٹمنٹ کے ساتھ ٹیکس کلیکشن اور ٹیکس کٹوتی کا واحد ثبوت سویپ پیمنٹ رسید (ایس پی آر) ہوگا’ سویپ ایجنٹس نے سویپ ایجنٹس کے طور پر رجسٹریشن اور انضمام کی تاریخ میں توسیع کا جواز پیش کیا ہے۔ آئی آر آئی ایس سسٹم کے ساتھ ساتھ متعلقہ کمشنر کو ان لینڈ ریونیو پر بھی درخواست دینی ہوتی ہے۔

سویپ ایجنٹس جو خلاف ورزی کے مرتکب پائے جائیں گے، ان کے خلاف انکم ٹیکس آرڈیننس 2001 کے تحت جرمانے اور سزائیں دی جائیں گی۔

پسندیدہ مضامین

کاروبارودہولڈنگ ٹیکس براہ راست وصولی کیلیے سویپ سسٹم تیار