29.9 C
Karachi
Sunday, May 19, 2024

پاکستان ایشیا کپ 2023 کے میچز کہاں کھیلے گا؟

ضرور جانیے

اسلام آباد-پاکستان ایشیا کپ کرکٹ میچز کی میزبانی لاہور اور ملتان میں کرے گا جس کا بنیادی مقصد سفری اور لاجسٹک مسائل سے بچنا ہے۔

پاکستان کرکٹ بورڈ (پی سی بی) کے ذرائع کا کہنا ہے کہ ان دونوں مقامات کو چار میچوں کی میزبانی کے لیے منتخب کیا گیا ہے جس میں ملتان کو کچھ حصہ ملنے کا امکان ہے۔

انہوں نے کہا کہ ملتان کو لاہور سے کچھ حصہ ملے گا جو پاکستان کا اہم مقام ہوگا۔ ہم نے پانچواں میچ حاصل کرنے کی بہت کوشش کی ہے اور اب بھی اس پر بات چیت کر رہے ہیں۔

بورڈ کے ذرائع کا کہنا ہے کہ چونکہ یہ فیصلہ پی سی بی کی سابقہ انتظامیہ نے کیا تھا اس لیے اس وقت یہ ایک مشکل کام ہے۔

ایشیا کپ کے آفیشل شیڈول کا اعلان آئندہ چند روز میں متوقع ہے۔ ایک اور اقدام کے طور پر یہ منصوبہ بنایا گیا ہے کہ ایشیا کپ کے بقیہ حصے کے لئے سری لنکا آنے والے تماشائیوں کو ڈالروں میں ٹکٹ خریدنے کے لئے کہا جائے گا۔

پالیسی

انہوں نے کہا کہ ہم ایک ایسی پالیسی تیار کرنے کی بھی کوشش کر رہے ہیں جس کے تحت تماشائیوں کو سری لنکا میں ڈالر میں ٹکٹ خریدنے ہوں گے۔ توقع ہے کہ برصغیر اور دنیا کے دیگر حصوں سے شائقین کی ایک بڑی تعداد ایشیا کپ دیکھنے کے لئے سری لنکا کا دورہ کرے گی جہاں پاکستان کے کم از کم دو بار بھارت سے مقابلہ کرنے کی توقع ہے۔

انہوں نے کہا کہ اگر دونوں روایتی حریف فائنل میں پہنچ جاتے ہیں تو یہ تیسرا موقع ہوگا جب دونوں ٹیمیں ایک دوسرے کے مدمقابل ہوں گی۔ ذرائع کا کہنا ہے کہ ان میچوں میں بڑی تعداد میں بھارتی اور پاکستانی شائقین کی شرکت متوقع ہے۔

دریں اثنا پی سی بی عہدیدار نے آئی سی سی ریونیو ایڈجسٹمنٹ پر بھی خوشی کا اظہار کیا جس میں پاکستان کو اب تک کا سب سے بہترین حصہ ملے گا جو بھارت، آسٹریلیا اور انگلینڈ کے بعد چوتھا سب سے بڑا حصہ ہے۔

اپنے آئینی حق کے مطابق پی سی بی نے گزشتہ چند ہفتوں اور آئی سی سی کے اجلاسوں میں مسلسل اضافی معلومات طلب کی ہیں تاکہ ہر معیار کو اہمیت دینے اور تقسیم کے حساب کے پیچھے کی منطق کو بہتر طور پر سمجھا جا سکے۔

اعداد و شمار

تمام متعلقہ معلومات، اعداد و شمار اور فارمولے کی عدم موجودگی میں پی سی بی نے محسوس کیا کہ اس طرح کا اہم فیصلہ جلد بازی میں نہیں کیا جانا چاہئے۔ لہٰذا پی سی بی نے تجویز پیش کی کہ اس آئٹم کو آئی سی سی کے اگلے اجلاس تک موخر کیا جا سکتا ہے۔

بالآخر ارکان کی اکثریت نے اس آئٹم کو مؤخر کرنا ممکن نہیں سمجھا اور ماڈل کی منظوری کے حق میں ووٹ دیا جبکہ پی سی بی نے اصولی طور پر اپنے اختلاف کو ریکارڈ کیا۔

نتیجتا مردوں کے آئی سی سی ایونٹس اور دو طرفہ کرکٹ میں پاکستان کرکٹ ٹیم کی کارکردگی، پی سی بی کے اپنے مداحوں کی بڑی تعداد، جس کی وجہ سے نمایاں تجارتی اہمیت حاصل ہوتی ہے، بورڈ کو اس ماڈل میں سرفہرست چار ممالک میں شامل کیا گیا۔

آمدنی میں اس اضافے کا مطلب یہ ہوگا کہ کرکٹ کی صلاحیتوں کو فروغ دینے کے لئے کہیں زیادہ سرمایہ کاری کی جاسکتی ہے اور پاکستان کرکٹ کو نئی بلندیوں پر لے جانے میں فائدہ مند ہوگا۔

ایشیا کپ کے حتمی شیڈول کا اعلان رواں ہفتے کے دوران کیے جانے کا امکان ہے۔

افتتاحی میچ پاکستان میں شروع ہونے والا ہے، ایونٹ کے میزبان کی حیثیت سے پی سی بی دنیا بھر کے کرکٹ شائقین کو پاکستان کی مشہور مہمان نوازی کا تجربہ کرنے کے لئے خوش آمدید کہنے کا منتظر ہے۔

پسندیدہ مضامین

کھیلپاکستان ایشیا کپ 2023 کے میچز کہاں کھیلے گا؟