29.9 C
Karachi
Saturday, February 24, 2024

ڈھائی لاکھ افغان واپس روانہ، پاکستانی معیشت پر مثبت اثرات

ضرور جانیے

اسلام آباد/پشاور/کابل: حکام کا کہنا ہے کہ تارکین وطن کی واپسی سے پاکستانی معیشت پر مثبت اثرات مرتب ہو رہے ہیں۔

پاکستان میں غیر قانونی طور پر مقیم غیر ملکیوں کی وطن واپسی کا سلسلہ جاری ہے، اب تک تقریبا ڈھائی لاکھ افغان شہری اپنے وطن واپس جا چکے ہیں۔ گزشتہ روز 593 خاندانوں کے 3250 افراد کو ان کے وطن واپس بھیج دیا گیا۔

حکام کے مطابق تارکین وطن کی واپسی سے پاکستانی معیشت پر مثبت اثرات مرتب ہو رہے ہیں۔ اگرچہ افغان حکومت نے قونصل جنرل کو پاکستان سے ڈی پورٹ کیے گئے تارکین وطن کو قبول کرنے کی تصدیق کی ہے، جو ان کی حیثیت کا تعین کرے گا، لیکن پہلی بار جمعے کو خیبر پختونخوا کے راستے ایک بھی غیر قانونی تارکین وطن کو واپس نہیں بھیجا گیا۔
ذرائع کے مطابق سیکڑوں افغان شہریوں کو ان کے سامان کے بغیر ملک بدر کرنے سے قبل پاکستان میں گرفتار کیا جا چکا ہے۔ بہت سے معاملات میں، غیر دستاویزی خاندانوں سے تعلق رکھنے والے مردوں کو ان کی خواتین کے بغیر جلاوطن کر دیا گیا ہے

پاکستانی حکام کا کہنا تھا کہ افغان انتظامیہ نے انہیں ملک بدری کی شرائط سے کبھی آگاہ نہیں کیا۔

دریں اثنا ورلڈ فوڈ پروگرام نے خبردار کیا ہے کہ افغانستان واپس آنے والے خاندانوں کے لیے 2.7 ملین ڈالر کی فوری ضرورت ہے جب ایک تہائی لوگوں کو یہ معلوم نہیں کہ ان کا اگلا کھانا کہاں سے آئے گا۔

افغانستان میں ورلڈ فوڈ پروگرام (ڈبلیو ایف پی) نے خبردار کیا ہے کہ وہ فنڈز کی کمی کی وجہ سے پاکستان سے افغان خاندانوں کی مدد جاری نہیں رکھ سکے گا۔ ایسا کرنے پر مجبور کیا.

پسندیدہ مضامین

پاکستانڈھائی لاکھ افغان واپس روانہ، پاکستانی معیشت پر مثبت اثرات