23.9 C
Karachi
Monday, March 4, 2024

سانحہ 9 مئی، پی ٹی آئی کے 4 رہنماؤں کو اشتہاری قرار دینے کی کاروائی کا آغاز

ضرور جانیے

کیس میں میاں اسلم اقبال، مسرت جمشید چیمہ، جمشید اقبال چیمہ اور غلام عباس شامل ہیں۔

لاہور: انسداد دہشت گردی کی عدالت نے 9 مئی کو آتش زنی اور گھیراؤ کے کیس میں تحریک انصاف کے 4 رہنماؤں کو ساتھی قرار دینے کا عمل شروع کردیا۔ میڈیا رپورٹ کے مطابق انسداد دہشت گردی کی عدالت نے 9 مئی کو گلبرگ تھانے میں آتش زنی اور گھیراؤ کے واقعات پر دائر دو مقدمات کی سماعت کی۔

پی ٹی آئی رہنماؤں میں میاں اسلم اقبال، مسرت جمشید چیمہ، جمشید اقبال چیمہ اور غلام عباس شامل ہیں۔ تفتیشی افسران نے مسلسل عدم پیشی پر ملزم کو قابل قبول قرار دینے کی درخواست کی تھی۔

دوسری جانب سانحہ 9 مئی کی مشترکہ تحقیقاتی ٹیم نے 14 مقدمات کی تحقیقات مکمل کرلی ہیں۔

جس میں چیئرمین پی ٹی آئی کو دس نامزد مقدمات میں مجرم پایا گیا تھا۔ ذرائع کے مطابق نعمانی کے کیسز کی تحقیقات کرنے والی جے آئی ٹی نے 14 کیسز کی تحقیقات مکمل کرلی ہیں۔ جے آئی ٹی ذرائع کے مطابق چیئرمین تحریک انصاف کے خلاف مرکزی کیس 96/23 2000 صفحات پر مشتمل ہے۔ گنہگار قرار دیا گیا۔

جے آئی ٹی حکام کے مطابق جناح ہاؤس حملے میں براہ راست ملوث 80 ملزمان کے بیانات سے سازش کے عنصر کا انکشاف ہوا۔ 9 مئی کے واقعات پر تحقیقات کے دوران براہ راست سازش کے ثبوت بھی ملے تھے۔ چیئرمین پی ٹی آئی کے بیانات صورتحال سے مطابقت نہیں رکھتے۔ جے آئی ٹی کے مطابق چیئرمین پی ٹی آئی 9 دیگر مقدمات میں بھی ٹھوس شواہد کی روشنی میں مجرم پائے گئے، چودہ مقدمات کا چالان جلد عدالت میں پیش کیا جائے گا۔

پسندیدہ مضامین

پاکستانسانحہ 9 مئی، پی ٹی آئی کے 4 رہنماؤں کو اشتہاری قرار...