15.9 C
Karachi
Thursday, February 22, 2024

ورلڈ بینک نے 50 ہزار روپے سےکم تنخواہ پر ٹیکس لگانےکی سفارش واپس لے لی

ضرور جانیے

اسلام آباد: عالمی بینک نے 50 ہزار روپے سے کم آمدنی والوں پر ٹیکس عائد کرنے کی سفارش واپس لے لی۔

وزارت خزانہ کے ذرائع کے مطابق پسماندہ تنخواہ دار طبقے نے 3 ماہ میں امیر ترین برآمد کنندگان ریئل اسٹیٹ سیکٹر سے زیادہ ٹیکس ادا کیا۔

عالمی بینک کے ترجمان کی جانب سے جاری بیان میں کہا گیا ہے کہ عالمی بینک نے 50 ہزار روپے ماہانہ سے کم آمدن پر ٹیکس لگانے کی انتہائی متنازع سفارش پر ہفتے کے روز اپنا موقف واضح کردیا۔

عالمی بینک کے ترجمان کا کہنا تھا کہ اس کی سفارش 2019 کے اعداد و شمار پر مبنی ہے جسے حالیہ افراط زر اور لیبر مارکیٹ کے حالات کی روشنی میں اپ ڈیٹ کرنے کی ضرورت ہے۔

بینک کے ترجمان کا کہنا تھا کہ ‘ہم انکم ٹیکس استثنیٰ کی کسی مخصوص نئی سطح کی سفارش نہیں کر رہے ہیں’، انہوں نے مزید کہا کہ عالمی بینک نے ٹیکس کی حد میں سطح اور مناسب تبدیلیوں کا اندازہ لگانے کے لیے نئے سروے تجویز کیے ہیں۔ تخمینہ نئے سروے کے اعداد و شمار پر مبنی ہونا چاہئے۔

عالمی بینک کے ترجمان کا کہنا ہے کہ کم آمدنی کے تحفظ کے لیے مناسب تبدیلیاں کی جانی چاہئیں۔

پسندیدہ مضامین

کاروبارورلڈ بینک نے 50 ہزار روپے سےکم تنخواہ پر ٹیکس لگانےکی سفارش...