15.9 C
Karachi
Friday, February 23, 2024

اقوام متحدہ اور یورپی یونین کے سیکرٹری جنرل نے پاک ایران کشیدگی پر تشویش کا اظہار کیا ہے۔

ضرور جانیے

اقوام متحدہ اور یورپی یونین کے سیکرٹری جنرل نے ایران اور پاکستان کے درمیان حالیہ کشیدگی پر گہری تشویش کا اظہار کیا ہے۔

اقوام متحدہ کے سیکرٹری جنرل کے ترجمان نے ایک بیان میں کہا کہ سیکریٹری جنرل کا کہنا ہے کہ سلامتی کے تمام خدشات کو بات چیت کے ذریعے حل کیا جانا چاہیے، انہوں نے دونوں ممالک پر زور دیا کہ وہ کشیدگی میں مزید اضافے سے بچنے کے لیے تحمل کا مظاہرہ کریں۔ مت بنو

اقوام متحدہ کے سیکرٹری جنرل نے کہا کہ دونوں ممالک کو خودمختاری، علاقائی سلامتی اور اچھے ہمسایہ تعلقات کے اصولوں کے مطابق مسائل حل کرنے چاہئیں۔

دوسری جانب یورپی یونین نے بھی پاکستان اور ایران کی صورتحال پر شدید تشویش کا اظہار کیا ہے۔

یورپی یونین کے ترجمان کا کہنا ہے کہ انہیں مشرق وسطیٰ اور اس سے باہر بڑھتے ہوئے پرتشدد واقعات پر گہری تشویش ہے۔

ترجمان کے مطابق پاکستان، عراق اور ایران میں ہونے والے حملے یورپی یونین کے لیے باعث تشویش ہیں۔

ایران کا پاکستان پر حملہ

ایران نے بلوچستان کے علاقے میں میزائل اور ڈرون حملے کیے جس کے نتیجے میں 2 لڑکیاں جاں بحق اور 3 زخمی ہوگئیں۔

پاکستان نے بلوچستان میں ہونے والے حملے کی شدید مذمت کرتے ہوئے اسے پاکستان کی خودمختاری کی خلاف ورزی اور دوطرفہ تعلقات کے خلاف قرار دیا اور کہا کہ اس حملے کی تمام تر ذمہ داری ایران پر عائد ہوتی ہے۔

بلوچستان پر حملے کے جواب میں پاکستان نے ایران میں تعینات سفیر مدثر ٹیپو کو واپس بلا لیا تھا جبکہ ایرانی سفیر کو بھی ملک بدر کردیا تھا۔

ایرانی دراندازی پر پاکستان کا ردعمل

بلوچستان پر حملے کے جواب میں پاکستان نے آپریشن ‘مارگبار، سرمچار’ کے ذریعے ایران کو جوابی کارروائی کی۔

ترجمان دفتر خارجہ کے مطابق پاکستان نے صبح ایران کے صوبے سیستان میں دہشت گردوں کی مخصوص پناہ گاہوں کو نشانہ بنایا، پاکستان کی کارروائیوں میں متعدد دہشت گرد مارے گئے۔

ترجمان دفتر خارجہ کے مطابق دہشت گرد ایرانی حکومت سے محروم علاقوں میں رہائش پذیر تھے۔

پسندیدہ مضامین

انٹرنیشنلاقوام متحدہ اور یورپی یونین کے سیکرٹری جنرل نے پاک ایران کشیدگی...