15.9 C
Karachi
Thursday, February 22, 2024

سائفر کیس کی سماعت 9 اکتوبر کو اوپن کورٹ میں ہو گی

ضرور جانیے

اسلام آباد ہائی کورٹ نے عمران خان کی درخواست ضمانت پر ایف آئی اے کی ان کیمرہ سماعت کی درخواست پر فیصلہ جاری کردیا۔

اسلام آباد: چیئرمین پی ٹی آئی عمران خان کی درخواست ضمانت پر اہم پیش رفت سامنے آئی ہے۔ چیف جسٹس عامر فاروق نے ایف آئی اے کی ان کیمرہ سماعت کی درخواست نمٹا دی۔ فیصلے کے مطابق سائفر کیس کی سماعت 9 اکتوبر کو دوپہر 2 بجے کھلی عدالت میں ہوگی۔

سماعت کے دوران وکلاء کی جانب سے حساس قرار دی جانے والی کوئی بھی معلومات ان کیمرے میں ہوں گی۔ اسلام آباد ہائی کورٹ نے چیئرمین پی ٹی آئی کی درخواست ضمانت پر ان کیمرہ سماعت کی درخواست پر فیصلہ محفوظ کرلیا۔ پیر کو چیف جسٹس عامر فاروق نے ایف آئی اے کی درخواست پر سماعت کی، عدالت نے کہا کہ اس درخواست کو مرکزی درخواست کے ساتھ سنتے ہیں۔ کیا آپ نے ایف آئی اے کی ان کیمرہ سماعت کی درخواست دیکھی ہے؟

وکیل نے کہا کہ میں عدالت کے سامنے کچھ درخواستیں کرنا چاہتا ہوں۔ چیف جسٹس نے کہا کہ استغاثہ نے درخواست دی ہے، پہلے اپنے دلائل پیش کریں۔ مقدمے کا معاملہ مختلف ہے۔ کیا ضمانت کی سماعت کیمرے میں بھی ہو سکتی ہے؟ میں نہیں جانتا، آپ بھی دیکھیں گے، سائفر سے متعلق ضابطہ اخلاق عدالت میں پڑھا گیا تھا۔ منور گل ایڈووکیٹ کا کہنا تھا کہ کوڈڈ میسج ہر ملک کے لیے مختلف ہوتا ہے، اس پر شاہ خاور کا کہنا تھا کہ سائفر ایک خفیہ دستاویز ہے جسے کسی بھی صورت میں خفیہ رکھا جاتا ہے۔ جاتا ہے، سائفر وزارت خارجہ کے پاس آتا ہے، عدالت نے کہا کہ سائفر کا اصل گھر وزارت خارجہ ہے۔ سائفر کیسے آتے ہیں؟ سماعت کے دوران کچھ اہم دستاویزات اور بیانات عدالت کے سامنے رکھنے ہیں، کچھ ممالک کے بیانات بھی ریکارڈ پر لائے جانے ہیں، اگر یہ عمل پبلک ہوا تو کچھ ممالک سے تعلقات متاثر ہوسکتے ہیں، سائفر ایک خفیہ دستاویز ہے، اس دستاویز کو کون ڈی کوڈ کرے گا؟ عدالت نے کہا کہ اگر سائفر سے متعلق کوئی ضابطہ اخلاق یا ایس او پی ہے تو مجھے بتائیں۔ چیف جسٹس نے کہا کہ میں نے آج تک ان کیمرہ درخواست منظور نہیں کی لیکن آپ اپنے دلائل دیں، ہمیشہ کی طرح سائفر کا ضابطہ اخلاق بتائیں۔ ہم اسے باہر بھی بھیج رہے ہوں گے، جو یہاں سفارت کار ہیں وہ بھی سائفر بھیج رہے ہوں گے، اس دستاویز کو کون ڈی کوڈ کرے گا؟

بعد ازاں دلائل سننے کے بعد عدالت نے ایف ایف آئی اے کی ان کیمرہ سماعت کی درخواست پر فیصلہ محفوظ کرلیا جو اب جاری کردیا گیا ہے۔

پسندیدہ مضامین

پاکستانسائفر کیس کی سماعت 9 اکتوبر کو اوپن کورٹ میں ہو گی