15.9 C
Karachi
Friday, February 23, 2024

ورلڈکپ میں ناقص پرفارمنس؛رمیز راجہ نے بورڈ پر تنقید کے نشتر چلادیئے

ضرور جانیے

پاکستان کرکٹ بورڈ (ڈیلی اردو پوائنٹ ۔ 12 نومبر 2023ء) کے سابق چیئرمین اور کمنٹیٹر رمیز راجہ نے ورلڈ کپ 2023 سے قومی ٹیم کو باہر رکھنے پر صحافیوں اور بورڈ کو تنقید کا نشانہ بنایا۔

سوشل میڈیا پر اپنے چینل پر گفتگو کرتے ہوئے سابق کرکٹر رمیز راجہ نے کہا کہ فاسٹ بولر شاہین شاہ آفریدی اور حارث رؤف کو تنقید کا نشانہ بناتے ہوئے انہوں نے کہا کہ جب ہمارے بولرز نئی گیند پر وکٹیں نہیں لیں گے تو بابر اعظم بطور کپتان کیا کریں گے؟

ان کا کہنا تھا کہ ورلڈ کپ کے دوران بورڈ نے کپتان اور آفیشل کی واٹس ایپ چیٹ لیک کردی، جنہیں کرکٹ کی سمجھ نہیں آتی! اگر ان کو عہدوں کی تقسیم کی جائے تو اس طرح کے نتائج دیکھنے کو ملیں گے۔

اجلاس

رمیز راجہ کا کہنا تھا کہ ٹیم کی ناکامی کے بعد بورڈ کے اعلیٰ حکام سابق کرکٹرز کا اجلاس بلاکر پوچھیں گے، مجھے بتائیں کہ کرکٹ کیسے فکس ہوگی؟ کپتان کو تبدیل کرنا اور کوچنگ اسٹاف کو برطرف کرنا کوئی بڑا کام نہیں ہے۔

سابق کرکٹر نے پی سی بی کی خبر لیک ہونے کے معاملے پر صحافیوں کو آڑے ہاتھوں لیتے ہوئے کہا کہ بورڈ نے کچھ لوگوں کو فیورٹ بنا دیا ہے جو پاکستان کرکٹ کا بیڑا غرق کر رہے ہیں۔

واضح رہے کہ عمران خان کے دور حکومت میں سابق چیئرمین رمیز راجہ کو بورڈ کا عہدہ دیا گیا تھا جبکہ سرفراز احمد کو میگا ایونٹ میں بھارت کے خلاف میچ میں وزیراعظم کی ہدایات پر عمل نہ کرنے پر 4 سال بعد کپتانی سے ہٹا دیا گیا تھا۔ ٹیم میں واپسی ہوئی۔

سرفراز احمد کو کپتانی سے ہٹائے جانے کے بعد رمیز راجہ کی جانب سے بابر اعظم کو قیادت کے فرائض سونپے گئے تھے جبکہ ان کے دور میں صحافیوں کے ساتھ بدسلوکی کے متعدد واقعات بھی پیش آئے تھے۔

پسندیدہ مضامین

کھیلورلڈکپ میں ناقص پرفارمنس؛رمیز راجہ نے بورڈ پر تنقید کے نشتر چلادیئے