25.9 C
Karachi
Friday, April 19, 2024

پاکستان کو اسپن خطرے سے خبردار کیا جانے لگا

ضرور جانیے

کراچی: آئی سی سی ورلڈ کپ میں افغانستان کے خلاف میچ سے قبل سابق کرکٹرز نے پاکستان کو اسپن خطرے سے خبردار کرنا شروع کردیا۔ ماضی میں بطور کوچ افغان ٹیم سے وابستہ فاسٹ بولر عمر گل نے کہا کہ پاکستانی ٹیم میں اب غلطیوں کی کوئی گنجائش نہیں ہے۔

انہوں نے بابر الیون کو مشورہ دیا ہے کہ انہیں اپنی غلطیوں سے تیزی سے سیکھنا ہوگا، میگا ایونٹ میں غلطیوں کی کوئی گنجائش نہیں، ہمیں صرف اپنی غلطیوں کو درست کرکے آگے بڑھنا ہے۔

ان کا مزید کہنا تھا کہ پاکستانی ٹیم میں صلاحیتوں کی کمی نہیں ہے، انہیں پلیئنگ کنڈیشنز میں پلان کے مطابق کھیلنے کی ضرورت ہے۔ انہوں نے امید ظاہر کی کہ پاکستانی ٹیم مضبوط واپسی کے بعد بھی آخری چار میں جگہ بنا سکتی ہے۔ گزشتہ چند سالوں میں شاہین آفریدی، حارث رؤف اور نسیم شاہ کا بولنگ اٹیک بہترین رہا ہے لیکن نسیم شاہ کی انجری نے ہمیں بری طرح متاثر کیا ہے۔

سابق منیجر اور کپتان

دوسری جانب سابق منیجر اور کپتان انتخاب عالم نے بابر اعظم کو قیادت چھوڑ کر بیٹنگ پر توجہ دینے کا مشورہ دیا۔ انہوں نے کہا کہ بابر اعظم کوہلی کی تقلید کریں اور خود کو قیادت سے دور رکھیں تاکہ وہ اپنی بیٹنگ سے لطف اندوز ہوسکیں۔ بابر اعظم پر باہر سے بہت دباؤ ہے۔

ایک اور سابق فاسٹ بولر شعیب اختر نے پاکستانی ٹیم کو خبردار کیا ہے کہ گرین شرٹس پیر کو افغان ٹیم کو آسان حریف نہ سمجھیں۔ کینگروز کے خلاف قومی ٹیم کی کارکردگی پر بھی عدم اطمینان کا اظہار کیا۔ انہوں نے سوال کیا کہ بابر اعظم نے کینگروز کے خلاف ٹاس جیت کر بولنگ کا فیصلہ کیوں کیا، وہ 320 رنز بنا کر بولرز کو موقع دینا چاہتے تھے۔

انہوں نے کہا کہ افغان اسپنرز چنئی کے سازگار حالات میں خطرناک ثابت ہوں گے، افغان ٹیم مضبوط ہے، اگر آپ اپنے آپ کو مزید شرمندگی سے بچانا چاہتے ہیں تو انہیں آسان حریف نہ سمجھیں۔ گیند چنئی میں گھومے گی۔ مجھے امید ہے کہ ہماری ٹیم مضبوط ہوگی۔ بہترین کوشش کریں گے.

پسندیدہ مضامین

کھیلپاکستان کو اسپن خطرے سے خبردار کیا جانے لگا