30.9 C
Karachi
Tuesday, April 23, 2024

اگلی قسط کیلئے پاکستان اور آئی ایم ایف کے درمیان مذاکرات آج ہونگے

ضرور جانیے

اسلام آباد: (ڈیلی اردو پوائنث ۔ 13 نومبر 2023ء) وزارت خزانہ کے ذرائع کے مطابق پاکستان اور آئی ایم ایف کے درمیان 71 کروڑ ڈالر کی اگلی قسط کے لیے پالیسی سطح کے مذاکرات آج شروع ہوں گے۔

ذرائع کا کہنا ہے کہ نگران وزیر خزانہ ڈاکٹر شمشاد اختر پاکستان کی معاشی ٹیم کی قیادت کریں گے، آئی ایم ایف کے جائزہ مشن کی قیادت ناتھن پورٹر کریں گے، پالیسی مذاکرات 13 سے 15 نومبر تک ہوں گے۔

پالیسی سطح کے مذاکرات کے پہلے روز وزارت خزانہ، ایف بی آر، اسٹیٹ بینک اور وزارت توانائی کے حکام شرکت کریں گے۔ مذاکرات میں رواں مالی سال کی پہلی سہ ماہی کی مالیاتی کارکردگی کا جائزہ لیا جائے گا اور آئندہ سہ ماہی کے اہداف کا تعین کیا جائے گا۔

پہلی سہ ماہی

وزارت خزانہ کا کہنا ہے کہ نگران حکومت نے قرض پروگرام میں پہلی سہ ماہی کے لیے مقرر کردہ تمام اہداف پر عملدرآمد کیا ہے، اجلاس میں ٹیکس وصولی اور رواں سال کے ٹیکس ہدف کے حصول کے اہداف پر تبادلہ خیال کیا جائے گا۔

ذرائع کے مطابق مذاکرات میں مارکیٹ بیسڈ ایکسچینج ریٹ کو جاری رکھنے اور سرمایہ کاری بڑھانے کے اقدامات پر غور کیا جائے گا، بجلی اور گیس کے گردشی قرضوں کے خاتمے کے لیے اقدامات پر غور کیا جائے گا۔

سرکاری کمپنیوں کی وزارت خزانہ کے مرکزی مانیٹرنگ یونٹ کو منتقلی پر غور کیا جائے گا۔ اگر پالیسی سطح پر مذاکرات کامیاب ہوتے ہیں تو آخر میں مشترکہ اعلامیہ جاری کیا جائے گا۔ یہ ممکن ہے.

مطالبات اور تجاویز

پالیسی سطح کے مذاکرات میں ان تمام مطالبات اور تجاویز کے تفصیلی جائزے اور غور و خوض کے بعد پالیسی سطح کے فیصلوں پر اتفاق کیا جائے گا جن کی روشنی میں معاشی جائزہ مکمل کیا جائے گا اور اگر معاشی جائزہ کامیابی سے مکمل ہوتا ہے تو آئی ایم ایف ریویو بورڈ دسمبر میں اس جائزے کی منظوری کے ساتھ، قرض کی اگلی قسط منظور ہونے کا امکان ہے۔

دوسری جانب آئی ایم ایف کے ایگزیکٹو بورڈ نے قرضوں کے کوٹے سے متعلق اصلاحات کی تجویز دی ہے، تجویز منظور ہونے کی صورت میں ممالک کے قرضوں کے کوٹے میں 50 فیصد اضافہ ہوگا، اصلاحات کی حتمی منظوری آئی ایم ایف کے بورڈ آف گورنرز 15 دسمبر کو دیں گے۔

آئی ایم ایف کی جانب سے جاری اعلامیے کے مطابق آئی ایم ایف کے ایگزیکٹو بورڈ نے قرضوں کے کوٹے سے متعلق اصلاحات کی تجویز دی ہے، اصلاحات کی حتمی منظوری آئی ایم ایف کے بورڈ آف گورنرز 15 دسمبر کو دیں گے۔

وزارت خزانہ کے ذرائع کا کہنا ہے کہ کوٹہ میں اضافے سے پاکستان بھی فائدہ اٹھا سکتا ہے، پاکستان اگلے پروگرام میں قرض کے کوٹے میں اضافے سے فائدہ اٹھا سکتا ہے، موجودہ قرض پروگرام ختم ہونے کے بعد اگلے قرض پروگرام میں کوٹہ بڑھ سکتا ہے۔ پاکستان کے لیے کوٹہ بڑھا کر وہ چھ سے نو ارب ڈالر قرض لے سکتا ہے۔

پسندیدہ مضامین

کاروباراگلی قسط کیلئے پاکستان اور آئی ایم ایف کے درمیان مذاکرات آج...