25.9 C
Karachi
Friday, April 19, 2024

میشا شفیع نے نجی ٹی وی کیخلاف لندن میں ہتک عزت کا مقدمہ جیت لیا

ضرور جانیے

پاکستانی گلوکارہ میشا شفیع نے نجی ٹی وی اے آروائی کے برطانوی براڈکاسٹر (این وی ٹی وی) کے خلاف ہتک عزت کے مقدمے کا پہلا حصہ جیت لیا ہے۔

لندن ہائی کورٹ کے ابتدائی کیس میں انکشاف ہوا تھا کہ میشا شفیع اور گلوکار علی ظفر سے متعلق کیس میں چینل نے اپنی نشریات کے ذریعے گلوکار کو بدنام کیا تھا۔

میشا نے ہتک عزت کے مقدمے کا پہلا حصہ جیتنے کی خبر ‘ایکس’ پلیٹ فارم پر فالوورز کو دی۔ گلوکارہ نے لکھا کہ لندن ہائی کورٹ نے اے آر کے خلاف غلط معلومات پھیلانے، مجھے بدنام کرنے اور لوگوں کو گمراہ کرنے پر میرے حق میں فیصلہ دیا کہ میں جھوٹی ہوں کیونکہ میں پاکستانی عدالتوں سے  بھاگ رہی ہوں۔

5 دسمبر 2020 کو اے آر وائی یوکے کی نشریات میں نیوز ریڈرز اور ٹیکرز کی رپورٹس کو ثبوت کے طور پر پیش کیا گیا۔

چینل کے پاس اب عدالت میں اپنا دفاع پیش کرنے کے لیے 26 جنوری 2024 تک کا وقت ہے۔

واضح رہے کہ 2018 میں میشا شفیع نے گلوکار و اداکار علی ظفر پر جنسی ہراسانی کا الزام عائد کیا تھا۔

حال ہی میں انٹرنیشنل عرب فیسٹیول ایوارڈز میں ‘پاکستانی خاتون گلوکارہ آف دی ایئر’ کا ایوارڈ جیتنے والے علی ظفر نے ان الزامات کے بعد میشا شفیع کے خلاف ہتک عزت کا مقدمہ دائر کیا تھا۔

گلوکارہ نے علی ظفر کے خلاف لاہور ہائی کورٹ میں جنسی ہراسانی کا مقدمہ دائر کیا تھا لیکن تکنیکی بنیادوں پر اس دعوے کو مسترد کردیا گیا تھا کیونکہ ان کے الزامات ورک پلیس ہراسمنٹ ایکٹ کے تحت نہیں آتے تھے۔

2021 میں سپریم کورٹ نے علی ظفر کے خلاف الزامات کام کی جگہ پر ہراسانی سے خواتین کے تحفظ کے ایکٹ، 2010 کے تحت آتے ہیں یا نہیں، اس کا تعین کرنے کے لیے ان کے کیس کی سماعت کرنے پر رضامندی ظاہر کی تھی۔

یہ مقدمات اب بھی زیر التوا ہیں۔

پسندیدہ مضامین

شوبزمیشا شفیع نے نجی ٹی وی کیخلاف لندن میں ہتک عزت کا...