25.9 C
Karachi
Friday, April 19, 2024

جسٹس مظاہر نقوی کو دوبارہ شوکاز جاری، جوڈیشل کونسل نے 14 روز میں جواب طلب کرلیا

ضرور جانیے

سپریم جوڈیشل کونسل نے سپریم کورٹ کے جسٹس مظاہر نقوی کو دوبارہ شوکاز نوٹس جاری کردیا۔

چیف جسٹس قاضی فائز عیسیٰ کی زیر صدارت سپریم جوڈیشل کونسل کا اجلاس ہوا جس میں جسٹس مظاہر نقوی کے خلاف شکایات کا جائزہ لیا گیا۔

ذرائع کے مطابق اجلاس میں سامنے آنے والے شواہد کی روشنی میں جسٹس مظاہر نقوی کو نوٹس جاری کیا گیا۔
سپریم جوڈیشل کونسل نے شوکاز نوٹس میں کہا ہے کہ جسٹس مظاہر نقوی شوکاز نوٹس کا 14 دن میں جواب دیں۔
ذرائع کا کہنا ہے کہ سپریم جوڈیشل کونسل نے تفصیلی شوکاز نوٹس جاری کیا لیکن جسٹس اعجاز الاحسن نے تفصیلی شوکاز نوٹس سے اختلاف کیا، جسٹس مظاہر نقوی سے شوکاز نوٹس میں 10 معاملات پر وضاحت طلب کی گئی ہے۔

شوکاز

ذرائع کا کہنا ہے کہ جسٹس مظاہر نقوی کو چار سے ایک کے تناسب سے شوکاز جاری کیا گیا، چیف جسٹس قاضی فائز عیسیٰ، جسٹس سردار طارق، جسٹس امیر بھٹی اور جسٹس نعیم افغان نے شوکاز کے معاملے کی حمایت کی، صرف جسٹس اعجاز الحسن نے جسٹس مظاہر نقوی کو شوکاز کے معاملے کی حمایت کی۔

ذرائع کے مطابق جسٹس مظاہر نقوی نے اس بات پر اعتراض کیا تھا کہ ان کے خلاف شکایات کی تفصیلات شوکاز میں درج نہیں کی گئیں، کونسل نے مسلسل 3 روز تک جسٹس مظاہر نقوی کے خلاف شکایات اور ان کے اعتراضات کا جائزہ لیا ۔

جسٹس مظاہر نقوی کو 27 اکتوبر کو کونسل کے اجلاس میں شوکاز نوٹس بھی جاری کیا گیا تھا۔

پسندیدہ مضامین

پاکستانجسٹس مظاہر نقوی کو دوبارہ شوکاز جاری، جوڈیشل کونسل نے 14 روز...