29.9 C
Karachi
Saturday, February 24, 2024

غیر قانونی مقیم غیر ملکیوں کو ملک چھوڑنے کے لیے یکم نومبر کی ڈیڈ لائن دی گئی ہے۔

ضرور جانیے

یکم نومبر کے بعد جائیداد ضبط کرنے اور گرفتاری کی کارروائی ہوگی، غیر قانونی شناختی کارڈ ہولڈرز کی نشاندہی کرنے والوں کو انعام دیا جائے گا، رضاکارانہ طور پر واپس نہ گیا ڈی پورٹ کیا جائے گا۔ نگران وزیر داخلہ سرفراز بگٹی کی پریس کانفرنس

نگران وفاقی حکومت نے غیر قانونی تارکین وطن کو یکم نومبر تک ملک چھوڑنے کی ڈیڈ لائن دے دی ہے۔ یکم نومبر کے بعد ٹاسک فورس جائیداد ضبط کرنے اور انہیں گرفتار کرنے کے لئے کارروائی کرے گی۔ تفصیلات کے مطابق نگراں وزیراعظم انوار الحق کاکڑ کی زیر صدارت ایپکس کمیٹی کا اجلاس ہوا۔

اپیکس کمیٹی

اجلاس میں غیر قانونی طور پر مقیم غیر ملکیوں کی بے دخلی سے متعلق امور کا جائزہ لیا گیا۔ اپیکس کمیٹی کا ہانڈی، اسمگلنگ اور بجلی چوری کے خلاف مزید سخت کارروائی کا فیصلہ انسداد منشیات کیلئے بھی سخت کارروائی کی جائے گی، ہر پاکستانی کی فلاح و بہبود اور تحفظ اولین ترجیح ہے۔ کسی کو بھی بندوق کی نوک پر اپنا ایجنڈا مسلط کرنے کی اجازت نہیں دی جائے گی، پاکستان میں خودکش حملوں میں افغان شہریوں کے ملوث ہونے کے شواہد موجود ہیں، پرتشدد کارروائیوں کو سختی سے دبایا جائے گا۔

نگران وزیر داخلہ سرفراز بگٹی نے پریس کانفرنس کرتے ہوئے کہا کہ غیر قانونی غیر ملکیوں کو یکم نومبر تک ملک چھوڑنے کی ڈیڈ لائن دی گئی ہے، رضاکارانہ طور پر واپس نہ آنے والے غیر ملکیوں کو ملک بدر کیا جائے گا۔ وزارت داخلہ کی ٹاسک فورس غیر قانونی رہائشیوں کی جائیدادوں اور کاروباروں کی بھی نشاندہی کرے گی۔ جعلی شناختی کارڈ رکھنے والوں کا ڈی این اے ٹیسٹ ہوگا۔

پاکستان میں داخل ے کی اجازت نہیں ہوگی

پاسپورٹ کے بغیر کسی کو بھی پاکستان میں داخل ے کی اجازت نہیں ہوگی۔ نگران وزیر داخلہ سرفراز بگٹی نے کہا کہ پاکستان واحد ملک ہے جہاں غیر ملکی بغیر پاسپورٹ کے آتے ہیں، غیر قانونی رہائشیوں کو یکم نومبر سے پہلے واپس چلے جانا چاہیے، شناختی کارڈ کے اجراء میں بہت سی بے ضابطگیاں ہوئیں، پاکستان میں غیر قانونی رہائشی ہیں۔ دستاویزات نہیں ہوں گی، غیر قانونی شناختی کارڈ ہولڈرز کی نشاندہی کرنے والوں کو انعام دیا جائے گا، غیر قانونی رہائشیوں کی جائیدادیں ضبط کی جائیں گی، ٹاسک فورس یکم نومبر کے بعد کارروائی کرے گی، نادرا کے فیملی ٹری ڈیفیشرز کرپشن میں ملوث سرکاری افسران کے خلاف سخت کارروائی کی جائے گی۔

اس وقت پاکستان میں افغان شہریوں کی تعداد 44 لاکھ کے قریب ہے، 44 لاکھ میں سے صرف 14 لاکھ افغان شہری رجسٹرڈ ہیں، یکم نومبر کے بعد غیر قانونی افراد کی گرفتاری پر بھی عمل درآمد ہوگا۔ ارادہ

پسندیدہ مضامین

پاکستانغیر قانونی مقیم غیر ملکیوں کو ملک چھوڑنے کے لیے یکم نومبر...