29.9 C
Karachi
Sunday, May 19, 2024

ہزارہ ایکسپریس ٹرین حادثہ‘ پاک فوج و رینجرز نے بھی امدادی سرگرمیاں جاری

ضرور جانیے

نوابشاہ- نواب شاہ کے قریب ہزارہ ایکسپریس میں پیش آنے والے حادثے کے بعد پاک فوج اور رینجرز نے جائے حادثہ پر امدادی سرگرمیاں شروع کردیں۔ تفصیلات کے مطابق آرمی چیف نے پاک فوج اور رینجرز کو امدادی سرگرمیوں کے لیے خصوصی ہدایات دیں جس کے بعد پاک فوج اور رینجرز کی امدادی ٹیمیں جائے حادثہ پر پہنچنا شروع ہوگئیں اور حیدرآباد اور سکرنڈ سے مزید ٹیمیں طلب کرلی گئیں۔

بتایا گیا ہے کہ اس المناک حادثے میں ہلاک ہونے والوں کی تعداد 25 تک پہنچ گئی ہے اور 100 سے زائد مسافر زخمی ہیں۔ اور کچھ کو الٹ دیا گیا۔ حادثے کے حوالے سے ڈی ایس ریلوے محمود الرحمان کا کہنا تھا کہ نواب شاہ کے قریب مسافر ٹرین کی تقریبا 10 بوگیاں پٹری سے اتر گئیں، اس حوالے سے معلومات حاصل کی جا رہی ہیں، امدادی ٹرین لوک شید روہڑی سے جائے حادثہ سے روانہ ہو رہی ہے۔ اس کی وجہ سے اپ ٹریک پر ٹریفک معطل ہے تاہم فی الحال حادثے کی وجہ معلوم نہیں ہوسکی ہے۔

ہزارہ ایکسپریس

مقامی پولیس کا کہنا ہے کہ حادثے کا شکار ہونے والی ہزارہ ایکسپریس میں کئی مسافر سوار تھے۔ خدشہ ظاہر کیا جارہا ہے کہ ٹرین حادثے میں زخمی ہونے والے افراد کو پیپلز میڈیکل اسپتال منتقل کرنے کا عمل جاری ہے۔ معلوم ہوا ہے کہ وفاقی وزیر ریلوے و ہوابازی خواجہ سعد رفیق کو ہزارہ ایکسپریس میں پیش آنے والے المناک حادثے کی اطلاع ریلوے اور ایوی ایشن محکموں کی کارکردگی کے حوالے سے پریس کانفرنس کے دوران ملی۔ تو دل کی ایک عجیب سی حالت تھی، بے چینی تھی، میرے پاس دعا کرنے میں تین دن باقی ہیں کہ یہ اچھی طرح سے گزر جائے، لیکن یہ حادثہ ہوا، کیا یہ چھیڑ چھاڑ ہے یا کسی تکنیکی خرابی کی وجہ سے، حادثے کی تفصیلات کی تحقیقات کی جا رہی ہیں۔ میں آگے آؤں گا۔

ان کا کہنا تھا کہ حادثے کی اطلاع ملتے ہی ہنگامی ٹیمیں جائے حادثہ پر روانہ کردی گئی ہیں، پہلا مرحلہ ریلیف کا ہے جس کے بعد تحقیقات کی جاتی ہیں جب کہ ابتدائی رپورٹس کے مطابق ٹرین 45 کلومیٹر کی رفتار سے چل رہی تھی۔ یہ مصدقہ رپورٹس نہیں ہیں، یہ لائن میں تخریب کاری اور مکینیکل خرابی ہوسکتی ہے، یہ تخریب کاری تھی یا تکنیکی خرابی کا فیصلہ ایف جی آئی آر کرے گا۔

پسندیدہ مضامین

پاکستانہزارہ ایکسپریس ٹرین حادثہ‘ پاک فوج و رینجرز نے بھی امدادی سرگرمیاں...