15.9 C
Karachi
Thursday, February 22, 2024

گوگل کروم نے ویب سائٹس کو تھرڈ پارٹی کوکیز استعمال کرنے سے روکنا شروع کردیا

ضرور جانیے

گوگل کروم نے 4 جنوری کو ویب سائٹس کو تھرڈ پارٹی کوکیز استعمال کرنے سے روکنا شروع کیا تھا۔

یاد رکھیں کہ ویب سائٹس لوگوں کے آن لائن رویے کو ٹریک کرنے اور اس کی بنیاد پر اشتہارات دکھانے کے لئے تھرڈ پارٹی کوکیز کا استعمال کرتی ہیں۔

گوگل پرائیویسی سینڈ باکس پروجیکٹ کے سربراہ انتھونی شاویز نے ایک بلاگ پوسٹ میں کہا کہ ابتدائی طور پر گوگل کروم کے ایک فیصد صارفین کے ویب براؤزر میں تھرڈ پارٹی کوکیز بلاک کی جا رہی ہیں۔

گوگل اس فیچر کو 2024 کے آخر تک کروم کے تمام صارفین کے لیے متعارف کرائے گا۔

خیال رہے کہ اس فیچر پر گوگل کی جانب سے طویل عرصے سے کام کیا جا رہا تھا تاہم اس پر عمل درآمد کئی بار ملتوی کیا گیا تھا۔

کروم میں یہ تبدیلی ویب سائٹس کے لئے بہت بڑی ہوگی۔

چھوٹی چھوٹی ٹیکسٹ فائلوں کی شکل میں کوکیز کو ویب براؤزنگ کے دوران ویب براؤزنگ کے دوران صارف کے فون اور کمپیوٹر پر محفوظ کیا جاتا ہے تاکہ اس کے آن لائن رویے کو سمجھا جاسکے جس کے مطابق اشتہارات دکھائے جاتے ہیں۔

گوگل کروم دنیا بھر میں سب سے زیادہ استعمال ہونے والا ویب براؤزر ہے اور 63 فیصد صارفین اسے براؤزنگ کے لیے ترجیح دیتے ہیں۔

سفاری ، فائر فاکس ، مائیکروسافٹ ایج اور دیگر میں طویل عرصے سے تھرڈ پارٹی کوکیز کو بلاک کرنے کی خصوصیت موجود ہے۔

لیکن گوگل اس حوالے سے سست روی سے پیش رفت کر رہا ہے کیونکہ اس فیچر سے آن لائن ایڈورٹائزنگ انڈسٹری پر منفی اثرات مرتب ہوں گے۔

گوگل اور دیگر کمپنیاں کوکیز کے متبادل پر بھی کام کر رہی ہیں تاکہ کمپنیوں کو معلوم ہو سکے کہ ان کے اشتہارات دیکھے جا چکے ہیں۔

انتھونی شاویز کے مطابق ، ہم ویب سرفنگ کو زیادہ نجی بنا رہے ہیں اور کمپنیوں کو آن لائن کامیاب ہونے کے اوزار دے رہے ہیں۔

پسندیدہ مضامین

ٹیکنالوجیگوگل کروم نے ویب سائٹس کو تھرڈ پارٹی کوکیز استعمال کرنے سے...