15.9 C
Karachi
Thursday, February 22, 2024

نیکی میں سبقت

ضرور جانیے

مدینہ منورہ میں ایک بوڑھی عورت رہتی تھی۔یہ بے چاری نابینا تھی۔ اس کے گھر کا کام کرنے کے لئے اس کا کوئی رشتہ دار یا عزیز نہیں تھا۔ جب حضرت عمر فاروق رضی اللہ عنہ کو اس بوڑھی عورت کی حالت کا پتہ چلا تو انہوں نے

حکایت صحابہ کرام رضی اللہ تعالیٰ عنہ

مدینہ منورہ میں ایک بوڑھی عورت رہتی تھی۔ یہ بے چاری اندھی تھی۔ اس کے گھر کا کام کرنے کے لئے اس کا کوئی رشتہ دار یا عزیز نہیں تھا۔ حضرت عمر فاروق رضی اللہ عنہ کو جب اس بوڑھی عورت کی حالت معلوم ہوئی تو وہ ہر رات اس بوڑھی عورت کے گھر جانے لگے۔ تم وہاں جاکر اس بوڑھی عورت کے سارے کام کرتے تھے، اس کے لیے کھانا تیار کرتے تھے، صفائی کرتے تھے اور پھر کنویں سے پانی لاتے تھے۔

ایک دن حسب معمول جب حضرت عمر رضی اللہ عنہ رات کے وقت اس بوڑھی عورت کے گھر پہنچے تو یہ دیکھ کر حیران رہ گئے کہ بوڑھی کے گھر کا سارا کام کسی نے پہلے ہی کر لیا ہے۔ آپ خاموشی سے واپس آ گئے۔

جب آپ اگلے دن دوبارہ آئے تو کسی نے ان سے پہلے ہی سارا کام کر لیا تھا۔ حضرت عمر رضی اللہ عنہ کو بہت حیرت ہوئی کہ ان سے پہلے یہ کام کرنے والا کون ہے۔

کچھ دن ایسے ہی گزر گئے۔ آخر کار حضرت عمر رضی اللہ عنہ کو تجسس ہوا کہ وہ ہر روز اس نیک عمل میں مہارت رکھنے والے شخص کو تلاش کریں۔

اگلے دن حضرت عمرؓ وقت سے پہلے ہی اس بوڑھی عورت کے گھر کے پاس چھپ گئے اور اس شخص کا انتظار کرنے لگے جس نے اس سے پہلے ایسا کیا تھا۔ ابھی تھوڑی دیر ہی ہوئی تھی کہ حضرت عمر ؓ نے ایک شخص کو آتے ہوئے دیکھا۔ وہ شخص آیا اور خاموشی سے کام کرنے لگا۔

حضرت عمر رضی اللہ عنہ کو یہ دیکھ کر حیرت ہوئی کہ وہ شخص کوئی عام آدمی نہیں تھا بلکہ حضرت ابوبکر صدیق رضی اللہ عنہ اس وقت کے خلیفہ تھے۔

پسندیدہ مضامین

اسلامنیکی میں سبقت