29.9 C
Karachi
Thursday, June 13, 2024

چیف جسٹس کو 60 ارب روپے کی کرپشن پر عمران خان کو نیک خواہشات پیش کرنی چاہئیں، نواز شریف

ضرور جانیے

چیف جسٹس کو 60 ارب روپے کی کرپشن پر عمران خان کو نیک خواہشات پیش کرنی چاہئیں، نواز شریف.لندن: پاکستان مسلم لیگ (ن) کے قائد اور سابق وزیراعظم نواز شریف نے کہا ہے کہ سپریم کورٹ کے چیف جسٹس عمر عطا بندیال کو پاکستان تحریک انصاف (پی ٹی آئی) کے چیئرمین عمران خان کو قوم سے 60 ارب روپے چوری کرنے پر نیک خواہشات پیش کرنی چاہیے تھیں۔

نواز شریف نے گرفتاری اور تمام مقدمات میں ضمانت کے بعد پہلی بار عمران خان کی بات کی اور ہلکے پھلکے نوٹ پر کہا کہ چیف جسٹس القادر ٹرسٹ/ برطانیہ کی نیشنل کرائم ایجنسی (این سی اے) سے متعلق 60 ارب روپے کی کرپشن کیس کے بارے میں اپنے ریمارکس میں عمران خان کو نیک خواہشات پیش کرنی چاہیے تھیں۔

نواز شریف کا کہنا تھا کہ سپریم کورٹ کے چیف جسٹس نے کہا کہ عمران خان کو دیکھ کر اچھا لگا لیکن وہ کہہ سکتے تھے کہ آپ کے لیے نیک خواہشات کیونکہ آپ نے قوم سے 60 ارب روپے لوٹے۔

تین بار وزیر اعظم رہنے والے عمران خان نے کہا کہ چیف جسٹس عمران خان کو آپ کے 60 ارب روپے سے خوش قسمتی بتا سکتے تھے۔

القادر ٹرسٹ

نواز شریف نے القادر ٹرسٹ اور برطانیہ کے این سی اے کیس کے حوالے سے ریمارکس دیے جس میں پی ٹی آئی سربراہ اور ان کی اہلیہ بشریٰ بی بی پر الزام ہے کہ انہوں نے برطانوی حکام کے ساتھ پراپرٹی ٹائیکون کے تصفیے سے منسلک 50 ارب روپے کو قانونی شکل دینے کے لیے اربوں روپے حاصل کیے۔ یہ رقم پی ٹی آئی حکومت کے دوران برطانیہ کی نیشنل کرائم ایجنسی نے ضبط کرکے پاکستان واپس کی تھی۔

معاہدے کے مطابق یہ رقم حکومت پاکستان کے اکاؤنٹ میں جانی چاہیے تھی لیکن یہ رقم عدالت کے ساتھ تصفیے کے لیے ٹائیکون کو دے دی گئی۔

نواز شریف کئی مواقع پر چیف جسٹس بندیال کو بنچ بنانے اور عمران خان کے حق میں فیصلے دینے پر تنقید کا نشانہ بنا چکے ہیں اور کہہ چکے ہیں کہ یہ ‘ملک کی خوشحالی کی قیمت پر’ ہیں۔

انہوں نے چیف جسٹس کو عمران خان کی قیادت والی تحریک انصاف میں کھل کر شامل ہونے کا مشورہ بھی دیا ہے۔

جمعے کو مریم نواز نے چیف جسٹس سے کہا کہ عمران خان کی حمایت کرنے کے لیے انہیں سیاسی رد عمل کے لیے تیار رہنا چاہیے۔

پسندیدہ مضامین

پاکستانچیف جسٹس کو 60 ارب روپے کی کرپشن پر عمران خان کو...