15.9 C
Karachi
Friday, February 23, 2024

برطانوی اراکین پارلیمنٹ نے ہردیپ سنگھ نجر کے قتل کا معاملہ پارلیمنٹ میں اٹھادیا

ضرور جانیے

لندن: برطانوی ارکان پارلیمنٹ نے پارلیمنٹ میں ہردیپ سنگھ نگر کے قتل کا معاملہ اٹھایا۔

برطانوی پاکستانی رکن پارلیمنٹ خالد محمود، شیڈو وزیر خارجہ ڈیوڈ لیمی، سکھ ارکان پارلیمنٹ پریت کور اور تن منجیت سنگھ نے بھی ہردیپ سنگھ کے قتل کی شفاف تحقیقات کا مطالبہ کیا ہے۔

برٹش پاکستانی رکن پارلیمنٹ خالد محمود نے کہا کہ بھارت کو خبردار کیا جائے کہ ریاستی دہشت گردی برداشت نہیں کی جائے گی۔

برطانوی وزیر خارجہ جیمز کلیورلی کا کہنا تھا کہ ہردیپ سنگھ کے قتل کے مجرموں کو انصاف کا سامنا کرنا پڑے گا، تمام ممالک کو قانون کی حکمرانی کا احترام کرنا چاہیے اور بھارت کے خلاف سنگین الزامات کے حوالے سے کینیڈا سے مسلسل رابطے میں ہیں۔

دوسری جانب کینیڈین وزیراعظم جسٹن ٹروڈو نے بھارت کو خبردار کیا کہ وہ کینیڈا میں سکھ رہنما کے قتل کے الزامات کو سنجیدگی سے لے اور کہا کہ ہم بھی اس معاملے کو سنجیدگی سے لے رہے ہیں، ہم ایک سکھ رہنما کے قتل کا جواب چاہتے ہیں، بھارت کو مشتعل کرنے کی کوئی کوشش نہیں کی جائے گی۔ .

واضح رہے کہ آزاد خالصتان کے رہنما ہردیپ سنگھ کو 18 جون 2023 کو کینیڈا میں ایک گردوارے کے باہر قتل کردیا گیا تھا۔ کینیڈا نے ہردیپ سنگھ کے قتل میں بھارت کے ملوث ہونے کا خدشہ ظاہر کیا ہے اور کینیڈا میں موجود بھارتی سفارت کار کو ملک بدر کردیا ہے۔ جس کے جواب میں بھارت نے کینیڈا کے سینئر سفارت کار کو بھی ملک چھوڑنے کا حکم دیا ہے۔

پسندیدہ مضامین

انٹرنیشنلبرطانوی اراکین پارلیمنٹ نے ہردیپ سنگھ نجر کے قتل کا معاملہ پارلیمنٹ...