25.9 C
Karachi
Friday, April 19, 2024

بلاول تہذیب میں رہ کر بات کریں، نیا تماشا شروع کیا ہے کہ ن لیگ بدلا لے گی، مریم اونگزیب، عظمیٰ بخاری

ضرور جانیے

مسلم لیگ (ن) کی رہنما عظمیٰ بخاری نے کہا ہے کہ میں صرف چیئرمین پیپلز پارٹی بلاول بھٹو کے لیے دعا کر سکتی ہوں جس رفتار سے بانی پی ٹی آئی کی پیروی کر رہے ہیں۔

جیو نیوز کے پروگرام ‘جیو پاکستان‘ میں گفتگو کرتے ہوئے عظمیٰ بخاری نے کہا کہ پی ٹی آئی کے بانی کی بلاول بھٹو پوری قوم کو یاد دلا رہے ہیں، لوگوں کے نام خراب کرنے، ان کا مذاق اڑانے کی یاد دلا رہے ہیں۔

وہ کہتے ہیں کہ ہم بلاول بھٹو کو جواب نہیں دے رہے، یہ ہماری پارٹی پالیسی ہے۔

ان کا کہنا تھا کہ دوسری جماعتیں کسی مسئلے کا حل نہیں چاہتیں، جنوبی پنجاب کو انتخابات میں سیاسی کارڈ کی طرح استعمال کیا جاتا ہے، پیپلز پارٹی جب حکومت میں آئی تو بھی صوبہ نہیں بنایا۔

عظمیٰ بخاری کا کہنا ہے کہ مسلم لیگ (ن) پنجاب کی تقسیم نہیں چاہتی، عام آدمی کے فائدے کے لیے مختلف یونٹس بنائے جائیں تو کوئی اعتراض نہیں، مسلم لیگ (ن) نے اس حوالے سے قرارداد منظور کی تھی جس کے بعد پی ٹی آئی کی حکومت آئی۔ نئی پارلیمنٹ کو اس معاملے کو دیکھنا چاہئے۔

مسلم لیگ (ن) کے رہنما کا مزید کہنا تھا کہ مسلم لیگ (ن) کو نشانہ بنا کر ایشو بنانا نامناسب ہے، سندھ میں زیادہ مسائل ہیں، مشکلات اور حالات بدتر ہیں، پیپلز پارٹی کو پنجاب میں کلہاڑی چلانے کا بہت شوق ہے۔

ان کا یہ بھی کہنا ہے کہ بلاول بھٹو کی یادداشت بہت کمزور ہے، انہوں نے ایک نیا شو شروع کیا ہے کہ مسلم لیگ (ن) ان کی جگہ لے گی، نواز شریف نے کبھی کسی کی جگہ نہیں لی، اگر انہیں تبدیل کرنا ہوتا تو انہیں 2013 سے 2018 تک اپنے ساتھ لے جایا جاتا۔ نواز شریف سی پیک اور کے فور کی حمایت نہیں کرتے۔

بلاول نئے لاہور میں گھوم رہے ہیں، مریم اورنگزیب

دوسری جانب پاکستان مسلم لیگ (ن) کی رہنما مریم اورنگزیب کا کہنا ہے کہ بلاول کو تحصیل میں رہتے ہوئے اپنی کارکردگی پر بات کرنی چاہیے، وہ نئے لاہور میں گھوم رہے ہیں، شاید انہوں نے پی کے ایل آئی نہیں دیکھی، انہوں نے یونیورسٹیوں اور دانش اسکولوں کا دورہ کیا ہے۔ نہیں دیکھا

مریم اورنگزیب کا کہنا ہے کہ سندھ سے پنجاب میں کیا ترقی لا رہے ہیں، میٹرو بس ہونا سندھ کا حق ہے، اورنج ٹرین ہونا کراچی کا حق ہے۔

ان کا کہنا تھا کہ پی ڈی ایم حکومت کی جانب سے کیے گئے فیصلے میں برابر کے شریک تھے، ہم نے پی ڈی ایم حکومت میں تمام جماعتوں کے ساتھ مل کر مشترکہ فیصلے کیے۔

ان کا یہ بھی کہنا ہے کہ آپ کی ذاتی سیاست کو کوئی سننا نہیں چاہتا، آج لوگ ان کے مسائل سننا چاہتے ہیں، بلومبرگ کی رپورٹ میں کہا گیا ہے کہ نواز شریف کی معاشی کارکردگی بہترین رہی۔

پسندیدہ مضامین

پاکستانبلاول تہذیب میں رہ کر بات کریں، نیا تماشا شروع کیا ہے...