30.9 C
Karachi
Thursday, June 13, 2024

بنگلہ دیش: ڈینگی وائرس خطرناک وبا کی صورت اختیار کرگیا، ایک ہزار کے قریب ہلاکتیں

ضرور جانیے

بنگلہ دیش میں ڈینگی وائرس ایک انتہائی خطرناک وبا بن چکا ہے، حالیہ ہفتوں میں ہلاکتوں کی تعداد ایک ہزار کے قریب پہنچ گئی ہے۔

برطانوی میڈیا کے مطابق بنگلہ دیش میں مون سون کا غیر معمولی موسم، طویل عرصے تک کھڑے رہنے والے بارش کے پانی اور گندگی کو مچھروں کی بڑی تعداد کا ذمہ دار قرار دیا جا رہا ہے جبکہ حکام ملک میں بڑھتے ہوئے کیسز اور اسپتالوں میں جگہ کی کمی پر پریشان ہیں۔

میڈیا رپورٹس کے مطابق مون سون میں ڈینگی وائرس کو موسمی بیماری کے طور پر جانا جاتا ہے لیکن موسمیاتی تبدیلی کی وجہ سے 2000 سے ڈینگی بخار میں مسلسل اضافہ ہورہا ہے اور بنگلہ دیش میں یہ وائرس انتہائی خطرناک بن چکا ہے۔

بنگلہ دیش کے مقامی صحت حکام کا کہنا ہے کہ ملک وائرس کی موجودہ صورتحال کے بعد ایمرجنسی کے لیے تیار نہیں تھا جس کی وجہ سے یہ وائرس انتہائی خطرناک ہو گیا ہے۔

ڈاکٹرز کے مطابق موجودہ صورتحال میں دیکھا گیا ہے کہ ڈینگی کے نئے مریضوں کی حالت گزشتہ چند سالوں کے مریضوں کے مقابلے میں بہت خراب ہے اور گزشتہ دو ماہ میں ڈینگی وائرس کے باعث 20 افراد جاں بحق ہوچکے ہیں جس کے بعد رواں سال ڈینگی کیسز کی تعداد میں اضافہ ہوا ہے۔ اموات کی تعداد گزشتہ 22 سالوں میں سب سے زیادہ ہے۔

حکام کا کہنا ہے کہ یہ ملک میں ڈینگی کی اب تک کی بدترین صورتحال ہے جس میں حالیہ ہفتوں میں تقریبا ایک ہزار افراد ہلاک ہو چکے ہیں۔

پسندیدہ مضامین

انٹرنیشنلبنگلہ دیش: ڈینگی وائرس خطرناک وبا کی صورت اختیار کرگیا، ایک ہزار...