21.9 C
Karachi
Wednesday, November 29, 2023

آرمی چیف عاصم منیر کا فوج اور عوام کے درمیان تعلقات کو مزید مستحکم کرنے کا عزم

ضرور جانیے

آرمی چیف عاصم منیر کا فوج اور عوام کے درمیان تعلقات کو مزید مستحکم کرنے کا عزم.پاک فوج کے شعبہ تعلقات عامہ (آئی ایس پی آر) کے مطابق آرمی چیف جنرل عاصم منیر نے پاکستان کے استحکام کے لیے فوج کے عزم کا اعادہ کرتے ہوئے اس عزم کا اعادہ کیا ہے کہ فوج اور عوام کے درمیان تعلقات کو مزید مستحکم اور مستحکم کیا جائے گا۔

ان خیالات کا اظہار انہوں نے کاکول میں پاکستان ملٹری اکیڈمی (پی ایم اے) میں پاسنگ آؤٹ پریڈ سے خطاب کرتے ہوئے کیا۔

پاک فوج کے شعبہ تعلقات عامہ (آئی ایس پی آر) کے مطابق آرمی چیف جنرل عاصم منیر نے پی ایم اے میں اپنی پہلی تقریر میں کہا کہ پاکستان کے عوام ریاست کے اتحاد میں مرکزی حیثیت رکھتے ہیں اور سب سے پہلے ریاست پاکستان سے وفاداری اور افواج پاکستان کو تفویض کردہ آئینی کردار سے وابستگی ہے۔

انہوں نے کہا کہ ہمارے لئے اپنے لوگوں کی حفاظت سے بڑھ کر کوئی چیز مقدس نہیں ہے اور مادر وطن کے دفاع سے بڑھ کر کوئی فرض نہیں ہے۔ انہوں نے کیڈٹس سے کہا کہ اب باہر نکلیں اور اپنی قوم کی توقعات پر پورا اتریں۔

فوج ہمارے عظیم قائد کے وژن پر عمل پیرا ہے جس میں ذات پات، رنگ، نسل، جنس یا جغرافیہ کی تفریق نہیں ہے۔

آرمی چیف نے کہا کہ امن کے لیے پاکستان کی کوششوں کو کبھی بھی کمزوری کی علامت کے طور پر نہیں لینا چاہیے۔

خودمختاری

انہوں نے کہا کہ ہمارے پاس اپنی خودمختاری اور علاقائی سالمیت کی حفاظت کرنے کی خواہش، صلاحیت اور صلاحیت ہے اور ہم ایسا کرنے کے طریقوں اور ذرائع سے بخوبی واقف ہیں۔ میں پاکستان کے عوام کو یقین دلاتا ہوں کہ ہم اپنے مقدس مادر وطن کے دفاع کے لئے ہر قربانی سے دریغ نہیں کریں گے۔

انہوں نے کہا کہ پاکستان کے بہادر جوان اپنے دشمنوں کی تعداد اور وسائل سے متاثر نہیں ہوتے۔

انہوں نے کہا کہ افواج پاکستان اللہ تعالیٰ کے حقیقی پیروکاروں کی حیثیت سے کئے گئے وعدوں کو پورا کرتے ہوئے اپنے مضبوط ارادے اور عزم کے ساتھ ثابت قدم ی کے ساتھ کھڑی ہیں۔ دہشت گردی

ملک کو دہشت گردی سے پاک کرنے کے عزم کا اظہار کرتے ہوئے آرمی چیف عاصم منیر نے کہا کہ ہماری محنت سے کمائے گئے امن کو خراب کرنے والوں کے لیے کوئی جگہ نہیں ہے۔

انہوں نے اس عزم کا اعادہ کیا کہ مسلح افواج آنے والی نسلوں کے مستقبل کو مستحکم، محفوظ اور محفوظ بنانے کے لئے کسی بھی قربانی سے دریغ نہیں کریں گی۔

داخلی بحران

ملک میں جاری بحرانوں کا حوالہ دیتے ہوئے جنرل عاصم منیر نے کہا کہ مخالفین کی جانب سے متعدد کوششوں کے ذریعے ریاستی اور سماجی ہم آہنگی کو متاثر کرنے کی نمایاں کوششیں کی جارہی ہیں۔

انہوں نے کہا کہ بے نقاب اور پوشیدہ دشمنوں کی شناخت کرنے کی اشد ضرورت ہے۔ اس سلسلے میں حقیقت اور فریب میں فرق ہونا چاہیے۔

جنرل عاصم نے کہا کہ ملک کے دشمن پاکستان کے عوام اور مسلح افواج کے درمیان خلیج پیدا کرنے پر تلے ہوئے ہیں اور ہم اس بات کو یقینی بنائیں گے کہ افواج پاکستان اور پاکستانی عوام کے درمیان تعلق برقرار رہے اور مزید مضبوط ہو۔

افغانستان

آرمی چیف نے مغربی سرحدوں پر امن کی اہمیت پر روشنی ڈالتے ہوئے کہا کہ افغانستان میں استحکام، سلامتی اور امن پاکستان کی سلامتی کی بنیاد ہے۔

مسئلہ کشمیر

انہوں نے کشمیری بھائیوں کو ملک کی مستقل حمایت کا یقین دلاتے ہوئے کہا کہ پاکستان بنیادی انسانی حقوق اور حق خودارادیت کے لئے ان کی جائز جدوجہد میں اپنے کشمیری بھائیوں کے ساتھ مضبوطی سے کھڑا ہے۔

ہم اپنے کشمیری بھائیوں کی سیاسی، اخلاقی اور سفارتی حمایت جاری رکھیں گے۔

انہوں نے عالمی برادری پر زور دیا کہ وہ اس بات کا ادراک کرے کہ مسئلہ کشمیر کے منصفانہ اور پرامن حل کے بغیر علاقائی امن ہمیشہ کے لیے ناممکن ہے۔

پسندیدہ مضامین

پاکستانآرمی چیف عاصم منیر کا فوج اور عوام کے درمیان تعلقات کو...