15.9 C
Karachi
Thursday, February 22, 2024

آنکھوں کی بینائی ختم کرنے والا انجکشن بنانے والے ملزم گرفتار

ضرور جانیے

لاہور – پولیس نے آنکھوں کی بینائی تباہ کرنے والا انجکشن بنانے والے ملزم کو گرفتار کرلیا۔ میڈیا رپورٹس کے مطابق پولیس نے عارف والا سے ناقص اور غیر رجسٹرڈ انجکشن بنانے والے ملزم بلال کو گرفتار کرلیا۔ پولیس حکام کے مطابق بلال ماڈل ٹاؤن کے ایک نجی اسپتال میں انجکشن تیار کرتا تھا اور انہیں غیر رجسٹرڈ اور غیر لائسنس یافتہ انجکشن اسپتالوں میں سپلائی کرتا تھا۔

واضح رہے کہ پنجاب کے مختلف علاقوں میں کنجنکٹوائٹس میں مبتلا 87 افراد انجکشن لگنے کی وجہ سے بینائی سے محروم ہوگئے تھے اور ان میں سے کچھ کی آنکھیں بھی ضائع ہوگئی تھیں۔ پولیس حکام کے مطابق ملزم کی گرفتاری عارف والا پولیس کی مدد سے کی گئی جبکہ اس سے قبل پنجاب پولیس کے اسپیشل آپریشنز ونگ نے ملزم کی گرفتاری کے لیے آپریشن کیا تھا۔

دوسری جانب پنجاب حکومت نے آنکھوں کے انجکشن سے آنکھوں کو پہنچنے والے نقصان کے معاملے پر نئی 10 رکنی تحقیقاتی کمیٹی تشکیل دے دی ہے۔

تحقیقاتی کمیٹی کا سربراہ

نوٹیفکیشن کے مطابق نگران وزیر صحت پنجاب ڈاکٹر جاوید اکرم کو تحقیقاتی کمیٹی کا سربراہ مقرر کیا گیا ہے۔ کمیٹی ناخوشگوار واقعے کی وجوہات اور وجوہات کا تعین کرے گی جبکہ تحقیقات 7 روز میں مکمل کر کے رپورٹ نگراں وزیراعلیٰ پنجاب محسن نقوی کو پیش کی جائے گی۔

واضح رہے کہ رجسٹرڈ ایواسٹن انجکشن کی تقسیم پر پابندی عائد کردی گئی ہے، ایواسٹن انجکشن کے درآمد کنندہ کو حکم نامہ بھیج دیا گیا ہے۔

ڈریپ ذرائع کے مطابق یہ پابندی صحت عامہ کے تحفظ اور غلط استعمال کی روک تھام کے لیے لگائی گئی ہے۔ ڈریپ نے درآمد کنندہ کو ایواسٹن کا اسٹاک مارکیٹ سے واپس لینے کی ہدایت کی۔

ذرائع کے مطابق فارمیسیز اور کیمسٹوں کے پاس موجود اسٹاک فروخت کیا جائے گا۔ رجسٹرڈ ایواسٹن انجکشن کا نمونہ ڈرگ ٹیسٹ لیبارٹری بھیج دیا گیا ہے، ڈرگ لیبارٹری کی رپورٹ آنے کے بعد ایواسٹن انجکشن کے حوالے سے فیصلہ کیا جائے گا۔

جبکہ محکمہ پرائمری ہیلتھ کیئر پنجاب نے ذیابیطس کے مریضوں کی بینائی متاثر کرنے والے غیر معیاری آئی انجکشن کے معاملے پر کارروائی شروع کردی۔ پرائمری ہیلتھ کیئر نے غیر قانونی اور غیر رجسٹرڈ کمپنی سے سوئیاں فروخت کرنے پر 11 ڈرگ انسپکٹرز کو معطل کردیا ہے۔ +

محکمہ پرائمری ہیلتھ کیئر کی جانب سے جاری نوٹیفکیشن کے مطابق لاہور سے 3 ڈرگ انسپکٹرز، بہاولپور اور رحیم یار خان سے 2 ڈرگ انسپکٹرز کو معطل کیا گیا ہے۔ محکمہ صحت پنجاب کے ذرائع کے مطابق انجکشن سے متاثرہ افراد کی تعداد 77 ہوگئی ہے۔ لاہور، ملتان، قصور، صادق اور بہاولپور میں کیسز رپورٹ ہوئے۔

پسندیدہ مضامین

پاکستانآنکھوں کی بینائی ختم کرنے والا انجکشن بنانے والے ملزم گرفتار